44

سکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن نےمینجمنٹ کمپنیوں اور سرمایہ کاروں کی مشکل آسانی میں بدل دیایسا کام کردیا کہ کاروباری طبقہ بڑے جھنجھٹ سے چھٹکارا حاصل کر لے گا 

[ad_1]

سکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن نےمینجمنٹ کمپنیوں اور سرمایہ کاروں کی مشکل …    اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان نے میوچل فنڈ انڈسٹری کی آسانی کے لئے ایسٹ مینجمنٹ کمپنیوں، سرمایہ کاری کی اجتماعی سکیموں اور انوسٹمنٹ ایڈوائزروں کے ریگولیٹری فریم ورک سے متعلق تمام سرکلرز، ڈائریکٹیوز اور حکم ناموں   پر مشتمل ماسٹر سرکلر جاری کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ماسٹر سرکلر میں  2009 سے لیکر اب تک جاری کئے گئے تمام سرکلرز کو ایک دستاویز کی شکل دے دی گئی ہے جبکہ موضوع کے مطابق سرکلر کو الگ الگ اسباق ترتیب دئے گئے ہیں۔ اس طرح ماسٹر سرکلر کے کل سولہ اسباق تشکیل دئے گے ہیں جن میں اجتماعی سرمایہ کاری کی سکیموں کے اقسام، کمپنیوں کے لئے لازمی معلومات کی فراہمی کی شرائط،  ایکسچینج ٹریڈ فنڈ، اہلیت کے معیار اور رسک مینجمنٹ اور ریگولیٹری کمپلائنس وغیرہ کو الگ الگ حصوں میں ترتیب دیا گیا ہے۔  ماسٹر سرکلر کے ذریعے ایسٹ مینجمنٹ کمپنیوں کو ریگولیٹ کرنے کے لئے جاری تمام سرکلرز کو یکجا کرنے سے قانون کی مکمل مقصدیت واضح  ہو گی،  متروک شدہ شرائط نکال دی گئیں ہیں جبکہ گزشتہ کئی سالوں میں مختلف سرکلرز جاری ہونے سے پیدا ہونے والے ممکنہ    قانونی تضادات کو ختم کر دیا گیا ہے۔ 

مزید :

بزنس –

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں