28

وزیر اعلیٰ پنجاب ساہیوال پہنچ گئے، مقابلے میں ملوث سی ٹی ڈی اہلکاروں کی …

وزیر اعلیٰ پنجاب نے ساہیوال مشکوک مقابلے میں ملوث سی ٹی ڈی اہلکاروں کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے۔


suspicion-competition-of-sahiwal

وزیر اعلیٰ پنجاب کے ترجمان ڈاکٹر شہباز گل نے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ ساہیوال واقعے پر وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی بات ہوئی ہے جس کے بعد فیصلہ کیا گیا ہے

کہ مشکوک مقابلے میں ملوث سی ٹی ڈی اہلکاروں کو ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ متعلقہ ضلعی انتظامیہ ہسپتال پہنچ چکی ہے جبکہ وزیر اعلیٰ پنجاب میانوالی سے فوری طور پر ساہیوال پہنچ چکے ہیں جہاں وہ لواحقین اور زخمی بچوں سے بھی ملاقات کریں گے۔

وعدہ کرتے ہیں کہ جو بھی ذمہ دار ہوگا اس کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔ ہم کسی ایسے رویے کو برداشت نہیں کریں گے جس میں عام شہری کے حقوق متاثر ہوں،

ہم سے جو ممکن امداد ہوسکی وہ کریں گے۔فوری گرفتار کیا جائے گا اور ان کے خلاف مقدمہ خیال رہے کہ سی ٹی ڈی کی جانب سے ساہیوال اور اوکاڑہ کے وسط میں واقع اڈا قادر آباد کے قریب ایک مقابلے کے دوران 4 افراد کو پار کیا گیا ہے۔

جاں بحق ہونے والے افراد لاہور کے علاقے چونگی امر سدھو کے رہائشی تھے جو بورے والا اپنے ایک عزیز کی شادی میں جارہے تھے۔

یہ خبر بھی پڑھے: جج صاحب! بیوی دن بھر سیلفی لیتی رہتی ہےمجھے طلاق چاہیے

سی ٹی ڈی کی جانب سے جس گاڑی پر فائرنگ کی گئی اس میں سے تین انتہائی کم عمر کے بچے بھی ملے ہیں جبکہ جاں بحق ہونے والوں میں ایک خاتون اور ایک 12 سالہ بچی شامل ہے۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں