31

عمران فواد چوھدری کے دورہ سندھ کا اعلان کوئی فساد پھیلانے آیا توآہنی ہاتھوں سے نمٹیں گے:مراد شاہ

وزیراعظم 25 جنوری کو سندھ جائیں گے، ہم خیال جماعتوں کے رہنماؤں سے ملاقاتیں کرینگے، وزیر اطلاعات کا دوروز و دورہ کل سے شروع ہو گا، سندھ کی سیاست میں چل کا امکان ، کشیدگی بڑھنے کا خدشہ کسی کے آنے پر پابندی نہیں لگار ہے ، پورا ملک وزیراعظم کا ہے جہاں چاہیں آئیں جائیں، فسادی ہمارے سامنے


نہیں کر سکتے، جب تک عوام اور پارٹی قیادت چاہے صوبائی حکومت قائم رہے گی :وز یر اعلی سندھ لاہور ، اسلام آباد (سیاسی رپورٹر، نمائندہ ایک پر لیں ، مانیٹرنگ ڈیسک، ایجنسیاں) سندھ کی سیاسی صورتحال میں ایک بار پھر بچل پیرا ہونے جارہی ہے ، وزیراعظم عمران خان اور وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری کے سندھ کے دوروں کا شیڈول تیار کر لیا گیا ہے ۔

وزیر اعظم سے قبل فواد چودھری سندھ کا دو روزہ دورہ کریں گے ۔ وزیر اطلاعات 15 ، 16 جنوری کو سندھ میں اہم سیاسی ملاقاتیں کریں گے ۔ وزیراعظم عمران خان 25 جنوری کو ایک روزہ دورے پر سندھ بیچ رہے ہیں۔ وزیر اعظم ہم خیال جماعتوں کی اہم شخصیات سے ملاقاتیں کریں گے۔ وزیر اعظم کو گھو کھی کے دورے کی دعوت علی گوہر خان مہر نے دی تھی ۔ وزیراعظم عمران خان دورہ سندھ میں پارٹی امور کا جائزہ بھی لیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے وزیراعظم کو سندھ میں جاری وفاقی حکومت کے ترقیاتی پراجیش پر پیش رفت کے بارے میں بھی آگاہ کیا جائیگا۔ وزیر اعظم کے دورے سے پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی میں کشیدگی بڑھنے اور سندھ کی سیاست میں ہلچل پیدا ہونے کا امکان ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ جب سندھ میں حکومت کی تبد یلی یا گورنر راج کی افواہیں گرم تھیں تو فواد چودھری نے 31 دسمبر کو سندھ کا دورہ کرنا تھا تاہم اسی روز چیف جسٹس کے ریمارکس کے بعد یہ دورہ ملتوی کر دیا گیا تھا۔

سکھر (نیوز ایجنسیاں) وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کوئی فساد پھیلانے سندھ میں آئے گا تو آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، ہم نے شر پسندوں کا مقابلہ کیا، چھوٹے موٹے فسادی کچھ نہیں کر سکیں گے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا صوبے میں کسی کے آنے پر پابندی نہیں لگار ہے ، جو آرہے تھے وہ خود آتے آتے رک گئے ، پورا ملک وزیر اعظم کا ہے ، جہاں چاہیں آئیں جائیں۔

جب تک پارٹی قیادت اور عوام چاہیں گے۔ سندھ حکومت قائم رہے گی اور میں وزیراعلی رہوں گا ، ای سی ایل میں نام ہونے پر مجھے کوئی فکر اور پرواہ نہیں، میں عدالتوں پر پورا یقین ہے کہ ریلیف ملے گا۔ یہ لوگ مجھے سرکاری دورے پر جانے سے نہیں روک سکتے اور میرا فی الحال کہیں جانے کا کوئی ارادہ نہیں ، ج اور کربلا سے بلاوا آیا تو مجھے کوئی نہیں روک سکتا۔

ملٹری کوراش کے حوالے سے پارٹی موقف سامنے آچکا ہے، سندھ حکومت نے پولیس اور فوج کی مدد سے دہشت گردی کا مقابلہ کیا
ہے۔ کسی کی بھی سندھ کے خلاف سازشیں کامیاب نہیں ہو سکتیں، اپوزیشن کا اکٹھا ہو نی اتحاد بناناپارٹی قیادت کا فیصلہ ہوتا ہے ، ملک اور خاص کر سندھ کے عوام آصف زرداری پر یقین رکھتے ہیں۔ فسادی کچھ بھی کر لیں سندھ میں ہمارے سامنے نہیں ٹھہر سکتے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں