20

ملک کے 27 ایئر پورٹس پر بورڈنگ برجز کو خطرناک قرار دیدیا

 اسلام آباد انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر پسنجر بورڈنگ برج کے حادثہ کے بعد قائم کی گئی سول ایوی یشن اتھارٹی کمیٹی نے ملک کے 27 ائر پورٹس کے بورڈنگ برجز کو مسافروں کے لئے خطر ناک قرار دےدیا ہے۔


لاہور، اسلام آباد، کراچی، ملتان، پشاور، کوئٹہ، فیصل آباد سمیت ملک بھر کے 27 پسنجر بورڈنگ برجز (PBB) میں 40 سے زائد نقائص کی نشاندہی کی گئی ہے۔ سول ایوی ایشن اتھارٹی حکام کی لاپرواہی سے طیاروں کے نقصان کےساتھ اور مسافروں کی زندگیوں پر خطرات منڈلانے لگے۔

اس حوالے سے سول ایوی ایشن اتھارٹی کی قائم کی گئی کمیٹی نے حاصل کر لی ہے۔ ذرائع کے مطابق اسلام آباد انٹر نیشنل ایئر پورٹ پر پسنجر بورڈنگ برج پر 8 اکتوبر 2018 کو حادثہ پیش آیا تھا جس میں ایک آدمی زخمی ہو گیا تھا جس کے بعد سول ایوی ایشن اٹھارٹی حکام نے سینئر جوائنٹ ڈائریکٹر ٹیکنیکل عمران نسیم فروغ کی سربراہی میںاعلی سطحی چار رکنی کمیٹی قائم کی۔

کمیٹی ممبران میں ندیم احمد خان (ایس ای اینڈ ایم )، عبدالقادر شیخ (سینئر اسسٹنٹ ڈائریکٹر ٹینکیل) اور عابد فاروق (سینئر اسسٹنٹ ڈائریکٹر) شامل تھے۔

جنہوں نے اپنی رپورٹ میں ملک کے 27 پیسنیجر برجز بورڈ (PBB)کی انسپکشن کی تو اس میں چالیس سے زائد نقائص کی نشاندہی کی گئی۔ ٹیکنیکل کمیٹی نے پسنجر بورڈنگ برجز کی رپورٹ میں کہا بورڈنگ برجز ناکارہ ہیں یہ مسافروں کےلئے استعمال نہیں کئے جا سکتے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا اندرون و بیرون ملک جانے والے مسافروں کو طیارے تک پہنچانے والے برجز میں نقائص کی بھرمار ہے۔ ٹیکنیکل کمیٹی نے سفارش کی غیر ملکی کمپنی ایڈیلٹی (ADELTE)جے وی کے لگائے گئے برجز کو تبدیل کرے کیونکہ بورڈنگ برجز زنگ آلودہ اور ٹوٹ پھوٹ کےساتھ کمزور ہو چکے ہیں۔

بورڈنگ برجز کی دیکھ بھال کرنے والے عملے کے پاس مکمل آلات بھی موجود نہیں۔ پسنجر بورڈنگ برجز(PBB)کراچی سمیت ملک بھر کے اہم ایئر پورٹس پر ایڈیلٹی (ADELTE)جے وی کمپنی نے بورڈنگ برجز کی تنصیب کی تھی۔

پسنجر بورڈنگ برجز نصب کرنے والی غیر ملکی کمپنی ایڈلٹی جے وی کو ٹیکنیکل کمیٹی نے آج طلب کیا ہے۔ سی اے اے کی ٹیکنیکل کمیٹی نے بورڈنگ برجز کی کارکردگی ان کی تنصیب اور مسافروں کی سیفٹی پر کئی سوالیہ نشان اٹھا دیئے ہیںساتھ یہ بھی کہا ہے پسنجربرجز بورڈنگ کی تھرڈ پارٹی سے اسسیسمنٹ کرائی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں