23

سعودی وزیرتوانائی کا دورہ گوادر:بڑی سرمایہ کاری کا علان

سعودی شمولیت سے سی پیک کی اہمیت بڑھے گی ،گوادر میں آئل سٹی کیلئے آئندہ ماہ معاہدہ کر ینگے ، وز یر پٹرولیم


اسلام آباد ، گوادر سعودی وزیر توانائی، صنعت و معدنی وسائل شہزادہ خالد بن عبد العزيز الفالح نے وفد کے ہمراہ گوادر کا دورہ کیا۔ گوادر ایئر پورٹ پر وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان اور وزیر برائے پورٹس اینڈ شپنگ علی زیدی نے مہمانوں کا استقبال کیا۔

بعد ازاں گوادر میں چاند بزنس کمپلیکس میں اجلاس ہوا جس میں دونوں ممالک کے در میان سرمایہ کاری سمیت مختلف شعبوں میں باہمی تعاون بڑھانے کیلئے مختلف معاہدوں کو حتمی شکل دینے پر مشاورت کی گئی، چیئر مین گوادر پورٹ اتھارٹی دو ستین خان جمالد ین اور بھی ڈی اے کے ڈی جی ڈاکٹر سجاد بلوچ نے وفد کو گوادر پورٹ اور ترقیاتی کاموں کے حوالے سے بریفنگ دی۔

شہر اده خالد بن عبد العزیز نے کہا سعودی عرب پاکستان میں تاریخ کی سب سے بڑی سرمایہ کاری کر دیا، پاکستان اور سعودی عرب خطے کے امن اور استحکام کیلئے دو اہمیت کے حامل ممالک ہیں، گوادر پورٹ ایک اہم خطے میں واقع ہے، پاکستان، چین اور سعودی عرب کی دوستی اور باہمی اشتراک عالی مثال ہو گا۔ وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے کہا سعودی عرب کی شمولیت سے سی پیک منصوبے کی اہمیت مزید بڑھ جائے گی،

پاکستان میں زراعت کے شعبے میں سرمایہ کاری کرنے کے وسیع مواقع موجود ہیں، سعودی عرب کو پاکستان میں ایگر یکپور سیکٹر میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہیں ، پاکستان اور سعودیہ گوادر میں آئل سٹی کے قیام کیلئے اگلے ماہ معاہدے پر دستخط کریں گے۔

بی بی کیس کے مطابق سعودی وزیر توانائی و پٹرولیم کی سربراہی میں سعودی وفد کے دورہ گوادر کا مقصد وہاں مجوزہ آئل رینا زری کیلئے مختص سائٹ کا معائنہ کرنا تھا۔ بریفنگ میں پاکستان اور سعودی حکام کے علاوہ چینی حکام بھی شریک تھے۔ سرکاری ریڈیو نے غلام سرور کے حوالے سے ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ گوادر میں مجوزہ آئل رینا نری 10 ارب ڈالر کی لاگت سے تعمیر کی جائے گی،

اس ریفائنری کی تیل ریفائن کرنے کی صلاحیت یومیہ دولاکھ پچاس ہزار بیرل ہو گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں