27

نواز شریف کو قیدی نمبر 4470 الاٹ ، جیل میں طبی معائنہ

آج خاندان کے لوگ ملاقات کرینگے ، نواز شریف نے قرآن مجید ، دینی اور ادبی کتابیں منگوالیں،


و کلا آئندہ ہفتے لاہور  العزیزیہ ریفرنس میں سات سال قید کی سزاسنائے جانے کے بعد کوٹ لکھپت جیل منتقل کئے جانے پر سابق وزیراعظم نواز شریف کو قیدی نمبر 4470 الاٹ کر دیا گیا، وہ جب تک جیل میں رہیں گے ان کی شناخت یہ نمبر ہو گا۔

حکام کی نگرانی میں کرائی گئی۔ میاں نواز شریف کے ایک ملازم کو جیل انٹر ی کارڈ بھی بنا دیا گیا جو جیل میں داخل ہوتے وقت استعمال کیا جائے گا۔ گزشتہ روز میاں نواز شریف کو ان کا ملازم گھر سے تیار کیا جانے والا کھانا جیل دے کر گیا جو کہ چیکنگ کے بعد میاں نواز
شریف کے لاک اپ میں پہنچا دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق میاں نواز شریف کالا کہ اپنے پونے سات بجے کھول دیا گیا، انہیں جیل انتظامیہ کی طرف سے چائے اور ڈبل روٹی کے سلائس دیئے گئے جبکہ دوپہر کا کھانا میاں نواز شریف نے گھر سے آیا ہوا کھایا۔ میاں نواز شریف نے صبح اٹھ کر نماز کی ادائیگی کی اور قرآن پاک کی تلاوت بھی کیا۔

جیل حکام نے نواز شریف سے ملاقات کیلئے جمعرات کا دن مقرر کیا ہے۔ ملاقات کیلئے مقر روان نواز شریف سے خونی رشتے دار اور وکلا ء ملا قات کے لیے آسکتے ہیں ۔ دوست احباب اور پارٹی رہنماؤں سے ملا قات کی لسٹ پہلے نواز شریف کو بھجوائی جائے گی اور نواز شریف کو جان سے مانا ہو گا ان کے نام سے سپرنٹنڈنٹ کو آگاہ کریں گے۔

آج نواز شریف سے ان کی والدہ، دونوں بیٹیاں ، حمزہ شہباز ، ایو سف عباس، عزیز عباس، محمد صفدر، جنیند صفدر ملاقات کرینگے۔ لیگی رہنماؤں شاہد خاقان عباسی ، احسن اقبال ، پرویز رشید ،راناثنا الله ، محمد زبیر، مشاہد اللہ خان ، مشاہد حسین سید ، مریم اور نگزیب اور طارق فضل چودھری نے نواز شریف سے ملنے کی درخواست کر دی۔ مزید بتایا گیا ہے کہ گزشتہ روز ڈاکٹروں کی خصوصی ٹیم نے 45 منٹ تک وزیراعظم کا طبی معائنہ کیا۔

معائنہ کیلئے جیل حکام نے سروسز ہسپتال سے ڈاکٹرز کی ٹیم کو مدعو کیا تھا۔ ڈاکٹرز کی ٹیم نے سابق وزیر اعظم کی صحت بارے تفصیلات پوچھیں اور ان کا بلڈ پریشر اور شوگر لیول نارمل قرار دیا ۔ نواز شریف کو رات گئے گھر سے آنے والی ادویات بھی پہنچادی گئی ہیں۔

مزید بتایا گیا ہے کہ نواز شریف نے قرآن مجید ، دینی اور ادبی کتابیں بھی منگوالی ہیں۔ میاں نواز شریف جس لاک اپ میں قید ہیں اس کو ہائی سکیورٹی زون قرار دیا گیا ہے۔ ابھی تک میاں نواز شریف اپنے بھائی میاں شہباز شریف کے کمرے میں ہی قید ہیں ۔ جیل ذرائع کے مطابق میاں شہباز شریف جب اسلام آباد سے واپسی کوٹ لکھپت جیل منتقل کیے جائیں گے تو ان کو علیحدہ کمرے میں قید کیا جائے گا۔

دونوں بھائیوں کی خواہش تھی کہ انہیں ایک ہی کمرے میں بند کیا جائے لیکن جیل زرائع کے مطابق یہ اجازت نہ مل سکی ۔ سابق وزیر اعظم پاکستان نے صبح اٹھ کر اپنے کمرے سے ملحقہ صحن میں چہل قدمی کی اور اخبارات کا مطالعہ کی گزشتہ روز ان کی کسی سے بھی ملاقات نہ ہو سکی۔

آج سے میاں نواز شریف کو گھر سے تیار کیے جانے والا کھانا باقاعدگی سے پہنچایا جائے گا۔ ادھر نواز شریف کی العزیزیہ سٹیل ملز ریفرنس میں سزا کے خلاف ان کے وکلا نے سر جوڑ لئے ، احتساب عدالت کے سزا کے فیصلے کے مختلف پہلوؤں کا جائزہ لیا گیا۔ فیصلے کو آئندہ ہفتے اسلام آباد ہائیکورٹ میں چین کیا جائیگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں