30

آئی ایم ایف نے پاکستان کو بیل آؤٹ پیکج نہ دے: امریکہ

چینی قرض ادا کرنے کیلئے پاکستان کو فنڈ نہیں دینا چاہیے، امریکی وزیر خارجہ کا خبر پر ردعمل :


پاکستان نے کوئی
اور خواست نہیں کی ، ترجمان آئی ایم ایف آئی ایم ایف سے متعلق معاملات پاکستان بہتر طریقے سے حل کر لے گا، امریکہ سمیت تمام ممالک کے ساتھ
ترقی کا سفر مل کر طے کرنے کے خواہشمند ہیں : چین واشنگئن، چینگ (مانیٹرنگ ڈیک، خبر ایجنسیاں) امریکہ نے پاکستان کو بیل آؤٹ پیج دینے کی خبروں پر آئی ایم این کو وارننگ جاری کر دی جبکہ چین نے امریکی طرز عمل پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ آئی ایم الف کو ڈکٹیشن نہ دے۔
 
امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ کوئی غلطی نہیں کرنی، امریکہ آئی ایم ایف پر نظر رکھے ہوئے ہے کہ وہ کیا کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں پاکستانی حکومت سے بات چیت چاہتے ہیں لیکن بیل آؤٹ پیکیج کا کوئی جواز نہیں ۔ آئی ایم ایف کو چین قرض ادا کر نے کے لیے پاکستان کی نئی حکومت کو فنڈ نہیں دیتا چاہیے۔ ایک غیر ملکی اخبار نے عمران خان کے لیے بار و ارب ڈالر کے آئی ایم ایف بیل آؤٹ پیج کی خبر شائع کی تھی۔ ترجمان آئی ایم ایف کے مطابق پاکستان نے ابھی تک نبیل آؤٹ پینے کی کوئی درخواست نہیں کی ، کسی بھی متوقع بیان پر پاکستانی حکام سے بات چیت نہیں کر رہے۔
 
واضح رہے کہ پاکستان اپنے کرنسی کے بحران سے نکلنے کی جدو جہد میں ہے جو کہ نئی حکومت کے لیے سب سے بڑا ہے۔ بہت سے تجزیہ کاروں اور تاجروں کا خیال ہے کہ پانچ سال کے اندر پاکستان کو دوسری بار بیل آوٹ کی ضرورت ہو گی تاکہ بیرونی مالی ابی پر پاک لگایا جا سکے۔ پاکستان پہلے سے ہی اپنے اہم منصوبوں کے لیے چین سے پانچ ارب ڈالر کا قرض لے چکا ہے اور اس نے بیرونی زر مبادلہ کے ذخائر کو اعتدال پر لانے کے لیے مزید ایک ارب ڈالر قرض کی خواہش ظاہر کی ہے۔
 
دوسری طرف چین نے امید ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئی ایم ایف سے متعلق معاملات پر پاکستان مناسب طریقے سے نمٹ
لے گا۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے اپنے قواعد وضوابط ہیں اسے ڈکٹیشن کی ضرورت نہیں ، چین جنوبی ایشیا میں سرمایہ کاری کیلئے او بور منصوبہ میں امریکہ سمیت تمام ممالک کو شراکت داری کی دعوت دیتا ہے ، چین تمام ممالک کے ساتھ ترقی و خوشحالی کا سفر مل کر کے کرنے کا خواہشمند ہے۔
 
چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان کینگ شوانگ نے معمول کی پریس کا نفر نس میں پاکستان سے متعلق آئی ایم ایف معاملے پر سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ مائک پومیو نے چینی سرمایہ کاروں کے قرضوں کی واپسی پر جو کچھ پاکستان کے لئے کہا اسے پاکستان بہتر سمجھتا ہے اور کنٹرول کر سکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں