23

گرین شرٹ نے کمزور حریف پر پہھر ہاتھ صاف کر لیا

رنز بنانے والے ان کی مار دھاڑ کے باوجود زمبابوین ٹیم پوائنگ میں قائٹ نہ کر سکی


، پاکستان کی 7 وکٹ سے فت فائنل میں رسائی، بولرز خاطر خواہ پر فارم نہ کر سکے ، میزبان نے 162 کا مجموعه پالیا، فخر، حسین اور سرفراز کی عده
ہرارے (اے ایف پی اسپورٹس ڈیسک) سہ ملکی سیریز میں گرین شرٹس نے کزور حریف پر پھر ہاتھ صاف کر لیا۔ سولومن مائر کی مار دھاڑ کے باوجود زمبابوین ٹیم فائٹ نہ کر سکی ، گرین شرٹس نے 7 وکٹ کی فتح کے ساتھ قاتل میں جگہ بنالی،
 
میزبان ٹیم نے او پیر کے جارحانہ 94رنز کی بدولت 4 وکٹ پر 162 کا قابل قدر ٹوٹل جوڑ کر خطرے 44 کی گھنٹی بجائی، پاکستان نے ہدف 5 گیندوں قبل 3 وکٹ پر حاصل کر لیا ، فخر زمان 47 اور حسین طلعت رنز کے ساتھ نمایاں رہے، کپتان سرفراز احمد نے ناقابل شکست 38 کی اننگز کھیلی۔ تفصیلات کے مطابق ہر ار سے میں پاکستان نے ٹاس جیت کر بولنگ کا فیصلہ کیا
 
، چا موچصاب کی جگہ سنبھالنے والے سیفاس زواؤ نے پہلے ہی اوور میں شعیب ملک کو آڑے ہاتھوں لیا، سولو من مائر اچھی فارم میں نظر آئے، پیسرز حسن علی اور محمد عامر بھی اوپنرز کیلیے زیادہ مشکلات پیدا نہیں کر سکے ، بالاخر فہیم اشرف نے زواد (24) کو بولڈ کر تے ہوئے اس شراکت کا خاتمہ کیا، مائر نے شاداب خان کے اوور میں 2 چھکوں سمیت 17 رنز بٹور کر 10 اوورز میں ٹیم کا نوئل 72 تک پہنچایا،
 
محمد نواز بھی رنز کی رفتار کم نہ کر پائے، شاداب خان نے ہملٹن مساکیڈزا (2) کی بیلز فضا میں بکھیریں تو گر بین شرٹس نے سکھ کا سانس لیا، مائر کا بیٹ مسلسل ر نزاگتا رہا، انھیں 94 پر ایک موقع ملا جب آصف علی نے آسان میچ ڈراپ کر دیا تاہم اگلی ہی گیند پر حسین طلعت نے ان کی اننگز کا تمام کر دیا
 
، اس بار شاداب خان نے فیلڈ میں کوئی غلطی نہیں کی، ٹیری سائی مساکانڈ (33) آخری اوور میں محمد عامر کی گیند پر شعیب ملک کو چو تھماتے ہوئے رخصت ہوئے ، الیشن پیامبر ا5 پر ناٹ آؤٹ رہے، زمبابوے نے 4 وکٹ پر 162 کا قابل قدر مجموعہ حاصل کیا، محمد عامر، فہیم اشرف، حسین طلعت اور شاداب خان نے ایک ایک وکٹ حاصل کی
 
۔ جوابی اننگز میں پاکستان کی
طرف سے فخر زمان نے حفیظ کی جگہ کھیلنے والے نئے اوپنر حارث سہیل کے ساتھ اننگز کا پراعتماد آغاز کیا، 7ویں اوور میں 58 کے مجموعی اسکور پر مساکیڈز نے حارث سہیل (16 ) کو لانگ آن پر سولو من مائر کی مدد سے جکڑ لیا ، فخر زمان 47 رنز بنانے کے بعد مائرز اور ایم پوفو کے گٹھ جوڑ کا شکار ہوئے، اس وقت پاکستان کو 46 گیندوں پر 66 رنز درکار تھے ، کپتان سرفراز احمد نے رنز کی رفتار بر قرار رکھی ، حسین طلعت کی 44رنز پرمشقتل پر اعتماد نگر کا خاتمہ ایم کو قو نے زواؤ کی معاونت سے کیا، شعیب ملک نے کپتان کو جوائن کرتے ہوئے کی جانب سفر جاری رکھا۔
 
پاکستان نے ہدف آخری اوور کی پہلی گیند پر حاصل کر لیا، سرفراز احمد 41 اور شعیب ملک 12 پر ناقابل شکست رہے ، اب تک کھیلے جانے والے تینوں میچز میں شکست کے بعد زمبابوین ٹیم فائٹل کی دوڑ سے باہر ہو چکی، پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین جمعرات کے میچ کا نتیجہ کچھ بھی ہو فا سل انہی دونوں ٹیموں کے مابین ہو گا، کینگروز نے پاکستان کے بعد زمبابوے کو بھی زیر کر لیا تھا دونوں ٹیمیں جانے کو بھی مد مقابل ہوں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں