tik tok banned in india 154

پورنوگرافی کی حوصلہ افزائی کرنے والا ایپ ٹکٹوں پر پابندی عائد کردی گئی

بھارت کے شہر چنائی میں واقع ہائی کورٹ نے ٹک ٹوک پر پابندی عائد کر دی اس پر الزام ہے کہ یہ بچوں کا ذہن خراب کردیا نوجوان نسل کو غلط راستے پر لے کے جا رہی ہے یہ پورنوگرافی کو حوصلہ افزائی کریں اور بچوں کے مستقبل خراب کر دیا


tik tok banned in india

عدالت نے میڈیا کو بھی حکم جاری کر دیا کہ وہ ٹک ٹوک کی بنائی ہوئی ویڈیو کی براڈ کاسٹنگ بالکل مت کریں

ٹک ٹوک نے کہا کہ وہ عدالت کے حکم کا انتظار کرتے ہیں عدالت کے حکم پر جانے کے بعد وہ اپنے مناسب اقدامات جاری کر دیں گے

یہ خبر بھی پڑھے: گلیکسی ایس 10 سام سنگ کے کمپنی میں بڑی خرابی سامنے آگئی

کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ پوری طرح قانون کی پاسداری کر رہے ہیں انہیں معلوم ہے کہ قانون کی پاسداری کی جاتی ہے لیکن عدالت کے حکم کے مطابق پورنوگرافی کو بہت ہی زیادہ وائرل کیا جا رہا ہے.

اور یہ تو بالکل بھی اثر انداز نہیں کر رہا یہ اس کو ترجیح دے رہا ہے اور اس کی صلاحیت کو سراہا ہے اور اس سے بچے ہمارے خراب ہو رہے ہیں

ایک تنظیم کا کہنا تھا کہ ٹکٹوں کو پابندی لگانے پر بہت مسائل پیدا ہو سکتا ہے اس سے ہمیں پلے سٹور سے بھی ڈیلیٹ کر آنا پڑے گا اور اس سے مسائل پیدا ہوں گے

ذرائع کا کہنا تھا کہ بھارت نے پہلے ہی سال پونم ویب سائٹس کو بند کروا دیا ہے اور ان پر پابندی عائد کر دی گئی ہے لیکن اس سے کوئی فائدہ نہیں ہوا.

ان لوگوں نے نئے سے نئے طریقے ایجاد کر کر اس پر رسائی حاصل کر لیا ہے جس سے بھارت کو بالکل بھی کوئی فائدہ نہیں ہوا

بھارت میں صرف ٹک ٹوک پر ہی پابندی عائد نہیں کی گئی ذرائع کے مطابق بتایا جا رہا ہے کہ پب جی(PUBG) پر بھی پابندی عائد کی گئی ہے اور ذرائع کے مطابق پولیس میں PUBG کھیلتے ہوئے بچوں کو بھی گرفتار کیا ہے

اس پوسٹ پر کمینٹ کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں